کردار کشی اور رازداری کے حقوق

کردار کشی بنیادی طور پر کسی کے کردار پر انگلی اٹھانے کو کہتے ہیں۔اس سے مراد کسی شخص،ادارے،یا گروہ کی ساکھ کو نقصان پہنچانے کے لئے اس کے بارے جھوٹی افواہیں پھیلانا،الزامات عائد کرنا اور معلومات میں ہیرا پھیری کرنا وغیرہ ہے۔

زمانہ قدیم میں لوگ ذاتی رنجش یاحسد کی بنا پر کسی کی کردار کشی کیا کرتے تھے۔ جو محض ایک محلے میں مقیم چند شخصیات تک محدود ہوتی تھی۔ مگر وقت کے ساتھ ساتھ کردار کشی کا دائرہ کار وسیع ہوتا چلا گیا۔لوگ زبانی کہانیاں گھڑنے لگے،تقاریر کے زریعے محفلوں اور پنڈالوں میں کردار کشی کا سلسلہ کا ر بڑھنے لگا۔نفرت کے بیوپاری اس کی آگ کو سلگانے لگے۔ سلسلہ کار مزید بڑھا تو بات اشتہاروں اور خاکوں تک جا پہنچی۔دور حاضر میں ان سب طریقوں کے ساتھ ساتھ ترمیم شدہ تصاویر اور ویڈیوز نے بھی لوگوں کی زندگیاں اجیرن بنا رکھی ہیں۔موجودہ دور میں سستی شہرت حاصل کرنے کے لئے نامور شخصیات کی کردار کشی کا سلسلہ بھی جاری ہے۔سوشل میڈیا اس کا محور ہے۔گزشتہ روز ایک مشہورگلوکار کی اہلیہ بارے بھی جعلی ویڈیو گردش کرتی رہی۔

SEE NOMINATION →