عالمی وبا کے 100 دن، ہم کیا کچھ جان چکے ہیں؟

عالمی ادارہ صحت کے مطابق 31 دسمبر 2019 کو چین میں اسے نمونیا کے کیسز کے بارے میں آگاہ کیا گیا جو ووہان میں کسی نامعلوم وجہ کے باعث سامنے آرہے تھے جو بعد میں نیا نوول کورونا وائرس ثابت ہوا۔

SEE NOMINATION →
شہابِ ثاقب: پاکستانی سرزمین پر گذشتہ ڈیڑھ صدی کے دوران گرنے والے 17 شہابیوں کی تاریخ

شہاب ثاقب یا میٹیورائٹ دراصل سیارچوں (ایسٹیرائڈز) یا دم دار ستاروں (کومیٹ) سے خارج ہونے والے ٹھوس پتھر ہوتے ہیں جو کرۂ ارض کا احاطہ کرنے والی فضا سے گزر کر سطحِ زمین تک پہنچتے ہیں پاکستان میں شہابِ ثاقب گرنے کی تاریخ بہت پرانی ہے۔ عالمی تنظیم میٹیوریٹیکل سوسائٹی کی جانب سے جاری کیے جانے والے ڈیٹابیس کے مطابق 18 ویں صدی سے سنہ 2020 تک کُل 17 شہابِ ثاقب پاکستان کے مختلف علاقوں خصوصاً صوبہ پنجاب اور سندھ میں گرے ہیں۔ ان میں سے بلوچستان کے علاقے ژوب میں گرنے والے صرف ایک ’ژوب میٹیورائٹ‘ کی ہی باقاعدہ تصدیق اور تجزیہ ہو سکا ہے۔ گلگت بلتستان اور پنجاب کے ضلع بھکر میں بھی شہاب ثاقب گرے جن کی خبریں تو میڈیا کی زینت بنیں مگر ان کے بارے میں کچھ معلومات دستیاب نہیں ہیں اور نا ہی اب تک انھیں میٹیوریٹیکل ڈیٹابیس میں درج کیا گیا ہے۔ اس رپورٹ میں تمام سترہ شہاب ثاقب کی مکمل تاریخ حوالہ جات کے ساتھ بیان کی گئی ہے۔

SEE NOMINATION →