ایک کے بعد دوسرا بحران

ایک کے بعد دوسرا بحران

Media Category: Print
Media Organization: Daily Jang, Karachi
By: Rizwan Ahmed

آٹے اور شکر کی قِلّت اور منہگائی کا بحران۔
کرونا کی وجہ سے پیدا ہونے والا بحران۔
ٹِڈّی دل کا بحران۔
پیٹرول کی قِلّت کا بحران۔
ادویہ کے نرخوں میں من مانے اضافے کا بحران۔
آکسیجن سلنڈر کے نرخوں میں ہوش ربا اضافے کا بحران۔
کرونا کے علاج کے لیےاستعمال ہونے والی ادویہ کے نرخ ہزاروں سے لاکھوں میں پہنچنے کا بحران۔
آج ملک کے طول و عرض میں بہت سے افراد یہ بحث کرتے نظر آتے ہیں کہ آخر ہم کب تک بحرانوں میں گِھرے رہیں گے۔ ایک کے بعد دوسرا بحران آتا ہے اور لوگوں کو ہلا دیتا ہے۔ قیامِ پاکستان سے آج تک ہم کئی بحرانوں سے گزر ے ۔ قوموںکی تاریخ میں بحران آتے رہتے ہیں، دیکھنا یہ ہوتا ہے کہ کس بحران سے کس طرح نمٹا گیا اور اس سے حاصل ہونے والے نتائج سے کیا سبق سیکھا گیا۔
پاکستان کی تاریخ ہر طرح کے بحرانوں سے بھری پڑی ہے، لیکن یوں محسوس ہوتا ہے کہ اب ان کی رفتار تیز اور جہتیں وسیع ہوگئی ہیں۔ تاریخ کے طالب علم کے لیے اب یہ سوال پہلے سے زیادہ اہمیت اختیار کرتا جارہا ہے کہ بحران کیوں آتے ہیں؟ تاریخ اس کا یہ سادہ سا جواب دیتی ہے کہ جب زندگی کے کسی شعبے میں زوال آتا ہے یا اس شعبے کے لیے اربابِ اختیار غلط حکمت عملی اور ترجیحات کا تعین کرتے ہیں تو اس کے منطقی انجام کے طور پر اس شعبے میں بحرانی کیفیت پیدا ہوجاتی ہے۔

Nominated Work

ایک کے بعد دوسرا بحران

Click Here To View The Nominated Work