کورونا کے ماحول پر مثبت اثرات، ماحول کو لاحق مسائل اور ممکنہ دیرپا حل

کورونا کے ماحول پر مثبت اثرات، ماحول کو لاحق مسائل اور ممکنہ دیرپا حل

Media Category: Print
Media Organization: NawaiWaqt
By: zulqarnainhundal

ہم ’لاک ڈائون‘ کے اس دورانیے میں اپنے باغیچوں میں درخت لگا کر ہی آغاز کرسکتے ہیں۔ہمیں زرعی رجحان کو فروغ دینا چاہئے تا کہ سرسبز دنیا فضا میں موجود زہریلی گیسوں کو علیحدہ کر سکے۔ہمیں توانائی کے حصول کے لئے حیاتیاتی ایندھن(Fossil Fuels) کے استعمال کی بجائے قابل تجدید توانائی(Renewable Energy) کے وسائل کو استعمال میں لانا چاہئے، جو ماحول دوست ہونے کے ساتھ بہت کارآمد بھی ثابت ہو سکتے ہیں۔ہمیں فیکٹریوں، کارخانوں سمیت گاڑیوں اور دیگر مشینوں میں توانائی کے موئثر آلات کو استعمال کرنا چاہئے۔ہمیں بڑی سطح پر بجلی گھروں، گاڑیوں اور فیکٹریوں سے نکلنے والے دھوئیں، گیسوں ،کیمیائی مادوں سمیت دیگر مہلک اور ماحول دشمن اخراج کو روکنے کے لئے آلات نصب کرنا چاہئیں، جیسے چمنیوں سے نکلنے والے دھوئیں میںزہریلی گیسوں کو نکالنے کے لئے( Catalytic Converter)استعمال ہوتے ہیں۔

Nominated Work

قدرت نے ایکو سسٹم جیسا ایک متوازن نظام دیا ہے جس نے بہت سی بے جان اشیاء کے ساتھ جانداروں کو بھی آپس میں جوڑا ہوا ہے۔جدت کی بلندیوں کو چھوتا انسان قدرت کا مقابلہ نہیں کر سکتا۔ قدرت کا اپنا ہی نظام ہے ،جو اپنے وقت اور رفتار پر گامزن ہے۔ تلخ حقیقت ہے کہ دنیا میں جنگوں اور وبائوں سے زیادہ لوگ ماحول سے متاثر ہورہے ہیں اور زیادہ تر وبائوں کی وجہ بھی ماحول ہی ہے۔ ہر سال ماحولیاتی آلودگی کی وجہ سے دنیا بھر میں 9-10ملین لوگ جان کی بازی ہار رہے ہیں۔عالمی صحت کے ادارے کے مطابق غیر صحت بخش ماحول میں رہنے یا کام کرنے کے نتیجے میں 2012میں12.6ملین جب کہ 2015میں9ملین لوگ ہلاک ہوئے۔جہاں دنیا ابھی تک کورونا کی ہولناکیوں سے پریشان ہے۔وہیں چند لوگ کورونا سے ماحول پر مثبت اثرات کے باعث مطمئن بھی ہیں۔

Click Here To View The Nominated Work