کورونا ویکسین نہ لگوانے کی سزا،سم بلاک کر دو

امت مسلمہ نے عید الاضحیٰ کا تہوار بخوشی منا یا تاہم کورونا وائرس کے پیشہ نظر گزشتہ برس کی مانند اس بار بھی کورونا ایس اوپیز پر کہیں عملدر آمد نہ کیا گیا جبکہ بعض نے حکومتی ہدایات و احکامات کو پس پشت ڈالتے ہوئے ۔معمولات زندگی جاری رکھے۔ ویکسینشن کے باوجود بھارت سے آمدہ ڈیلٹا وائرس کے وار اور کورونا کے بڑھتے کیسز نے ہر دوسرے شخص کو تشویش میں مبتلا کر دیا ہے اور جبکہ کورونا وائرس کی چوتھی لہر نے حکومت کو سخت فیصلے کرنے پر مجبور کر دیا ۔ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کوروناوائرس سے متعلق صوبائی ٹاسک فورس اجلاس میں صوبہ بھرمیں ریسٹورنٹس اور شادی ہالز میں انڈور سروس ، آٹ ڈور ڈائننگ بند رکھنے کا فیصلہ کیا۔تعلیمی اداروں کو بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاہم جہاں امتحانات جاری ہیں ان پر یہ فیصلہ لاگو نہیں ہو گا یعنی امتحانات ایس اوپیز کے تحت اپنے شیڈول کے مطابق ہونگے ۔ شہریوں کے لےئے بالخصوص ”موبائل فون وارمز“ کے لئے سب سے بڑی تشویش ناک خبر یہ ہوئی کہ ویکسی نیشن نہ کروانے والوں کی موبائل سم بلاک کر دی جائے جس پر عوام اپنے موبائلز آن رکھنے کے لئے متفکر ہو گئے۔کورونا کی تشویشناک صورت حال دیکھتے ہوئے اس نتیجہ پر پہنچا جا سکتا ہے کہ حکومت قوم کے ساتھ اس بارکھلواڑ نہیں کر رہی بلکہ دعالمی صورتحال کو دیکھتے ہوئے حالات کچھ بہتر نہیں ۔پاکستان میں کورونا کا دوسرا وار نہیں بلکہ پہلا وار ہی ختم نہیں ہوا تھا۔ اب چوتھی لہر خطر ناک بتائی جا رہی ہے۔ قوم ہوش کے ناخن لے۔

SEE NOMINATION →
Journalists In Balochistan Face Greater Insecurity With The Taliban Takeover Of Afghanistan

Balochistan is the largest geographic unit of Pakistan, comprising 43 percent of the land area of the country. The minerals-rich and strategically important province bordering Afghanistan and Iran while having a large coastal belt and Gwadar port has remained ridden with conflict and various uprisings. Here the Baloch insurgency, religious militancy, the TTP and the Islamic State have claimed the majority of the attacks in the post-9/11 era when the international community, NATO and ISAF forces were present in Afghanistan. In the recent takeover of Kabul by the Afghan Taliban, the Tehreek-e-Taliban Pakistan, once reported to be working under the umbrella of Al-Qaeda, has been emboldened. They have threatened journalists through their statements released and warned media houses not to refrain from calling them “terrorists” and extremists. One statement says that “Tehreek-e-Taliban Pakistan” should be spelled out entirely, otherwise the journalists would be deemed biased and seen as an enemy of the organization. According to the Federal Union of Journalists, 42 journalists killed in Balochistan from the list. As many as 24 were shot dead, and the cause of these killings in the province was cited as the insurgency and journalists not being properly trained to cover the conflict in a professional manner. The local culture, traditions and customs in Balochistan have restricted mobility of women. “If journalists are killed, their orphaned children and widows face many hardships because they have no other way to earn their livelihood, nor does the government provide much support

SEE NOMINATION →