سجاس کے تحت بیٹھک پروگرام، اسپورٹس پالیسی پر بحث اور تجاویز

کراچی میں صوبہ بھر کی تمام اسپورٹس کی ایسوسی ایشن کو سندھ کی نئی اسپورٹس پالیسی کے حوالے سے بحث کے لئے پروگرام بیٹھک میں مدعو کیا گیا۔ سجاس کی جانب سے بیٹھک پروگرام کا مقصد سندھ حکومت کی جانب سے نئی اسپورٹس پالیسی کو مرتب کرنے کے لئے مختلف ایسوسی ایشنز سے تجویز لینا تھاتاکہ ایک جا معِ اور مفصل و مضبوط اسپورٹس پالیسی مرتب کی جا سکے۔پروگرام میںسیکریٹری اسپورٹس اینڈ یوتھ افیئرید امیتا ز علی شاہ مہمانِ خصوصی تھے۔انہوں نےخطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسپورٹس پالیسی وقت کی اہم ضرورت ہے، جامع پلان نہ ہونے کے باعث مسائل پیدا ہوئے ہیں، محکمہ کھیل کا بنیادی کام ہی کھیلوں کو فروغ دینا اور کھلاڑیوں کی فلاح ہے، نئی پالیسی میں کھلاڑیوں کو انعامات اور عزازات دینے کا بھی ایک مکینزم بنارہے ہیں۔ کھلاڑیوں کی فلاح بہبود، عالمی سطح پر میڈلز جیتنے والوں کو انعامات دینے ، متوازی ایسوسی ایشنز کے خاتمہ، انفرا اسٹرکچر کا جال بچھانا اولین ترجیح ہے،گراس روٹ لیول پر کھیلوں کے فروغ کے لئے اقدامات کا لائحہ عمل تیار کیا جائے۔ میدانوں اور اسٹیڈیمز کے ساتھ ساتھ کھلاڑیوں کے ہاسٹلز بھی ہونے چاہیئں۔ محکمہ تعلیم سے مل کر اسکول اور کالج کی سطح پر کھیلوں کی سرگرمیاں کرنا بھی ہماری پالیسی کا حصہ ہوگا۔ خواتین کے کھیلوں کے فروغ کے ساتھ ان کو مناسب نمائندگی دی جائے گی۔ کھلاڑیوں کے لئے پینشن کوچز اور آرگنائزر ز کے لئے ایوارڈز اور انعامات تجویز کیئے گئے ہیں جبکہ اسپورٹس ویلفیئر فنڈز کی تجویز کو اسپورٹس پالیسی میں شامل کیا جائے گا۔ پیش کردہ معقول تجاویز پالیسی کا حصہ بنیں گی۔

SEE NOMINATION →