بلوچستان کا ہنگول نیشنل پارک: ’امید کی شہزادی‘ اور ’ابولہول‘ سمیت کئی عجائب کی سرزمین

ہنگول نیشنل پارک پاکستان کا سب سے بڑا نیشنل پارک ہے جو تقریباً چھ لاکھ 19 ہزار ایکڑ کے رقبے پر پھیلا ہوا ہے۔ یہ کراچی سے 190 کلومیٹر کے فاصلے پر بلوچستان کے تین اضلاع گوادر، لسبیلہ اور آواران میں پھیلا ہوا ہے۔ وسیع رقبے پر پھیلے اس علاقے کو سنہ 1988 میں نیشنل پارک کا درجہ دیا گیا تھا۔ اس پارک میں سیاحوں کی کشش کے لئے چھ ایکو سسٹم موجود ہیں ۔ یہاں بیک وقت صحرائی و میدانی علاقے بھی ہیں۔ شمال میں گھنے جنگلات اور جنوب میں بنجر پہاڑی سلسلہ ہے جبکہ دوسری جانب دریائے ہنگول کے ساتھ وسیع کھاڑی یا نمکین پانی والا دلدلی علاقہ ہے۔ یہ دریا آگے جا کر سمندر میں گرنے سے پہلے مدوجزر والا ایک دہانہ بناتا ہے جو ہزاروں ہجرتی پرندوں اور دلدلی مگرمچھوں کا مسکن ہے۔ اس پارک کا نام اس کے جنوبی حصے میں بہنے والے دریائے ہنگول کے نام پر رکھا گیا جو بحیرۂ عرب کے ساحل کے ساتھ بہتا ہے اور بڑی تعداد میں آبی پرندوں اور سمندری حیات کو محفوظ پناہ گاہ فراہم کرتا ہے۔ ہنگول نیشنل پارک میں ملک بھر سے سیاحوں کی آمد کا باقاعدہ آغاز سنہ 2004 میں مکران کوسٹل ہائی کی تکمیل کے بعد ہوا۔ عجائب کی اس سرزمین پر جو پانچ اشیا سب سے پہلے سیاحوں کو اپنی طرف متوجہ کرتی ہیں وہ جنگلی و سمندری حیات، انوکھے طرز پر طراشی گئی چٹانیں ، امید کی شہزادی اور اسفنکس آف بلوچستان ، مڈ وویلینو یا مٹی فشاں، ہنگلاج ماتا کا مندر، اور مکران کے دلکش ساحل شامل ہیں ۔ رپورٹ میں خوبصورت تصاویر کے ساتھ ان تمام مقامات کی تفصیلات شامل ہیں ۔

SEE NOMINATION →
Balochistan’s most beautiful cities”Turbat”

Balochistan’s most beautiful cities ”Turbat” By Parliament Times -April 9, 2021 Nasir Fazal Baloch Turbat, the second biggest city of Balochistan with a population of 213,557, falls in southern Balochistan. It is the centre of Makran Division In past, it has been the capital of Makran state. In recent times, Turbat is cited as the most beautiful city of Balochistan. Everyone is familiar with the beauty of Gaddani, Kundmalir, Gwader, Sonmiani, Ormara, Astola Island beaches so on, but few have taken the time to discover the mesmerizing beauty of the Turbat’s coast. We planned a trip with my friends to Absar Dam. We set up our journey on a cool, January evening what else could be better than riding the bikes with Shahzaib Arz Baloch, Mujeeb, Shezad, Zaheer , Baloch Khaan and Muhammad Xamurani and wondering in Turbat. From SariKhan to Absar Dam, there are so many gardens and mountains that make peace to mind and soul. Passing from the “DoKorm River” on way, we get inside the boundary of ” Koh e Murad” which is a famous shrine of Turbat, Balochistan. It is a holy place for “Zikris” where they usually offer their prayers. When we passed DoKorm we reached near the “Farm It is a beautiful, small site with beautiful gardens around. People often come here for picnics and enjoy their day delightedly. Afterwards, we reached at Dam, my first sight of the Dam was the color of the water and the desert which is in front of the water namely ” Mulad e rekh” It’s a beautiful desert which gives relaxation to the soul. So , I suggest everyone to visit Turbat city , and enjoy the beautiness of it

SEE NOMINATION →